உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    طالبان راج کا اثر، پاکستان - افغانستان ونڈے سیریز ملتوی، افغانستان کرکٹ بورڈ نے جاری کیا بیان

    طالبان راج کا اثر، پاکستان - افغانستان ونڈے سیریز ملتوی

    طالبان راج کا اثر، پاکستان - افغانستان ونڈے سیریز ملتوی

    افغانستان پر طالبانی (Taliban) راج کے سبب کابل سے تجارتی پرواز منسوخ کردی گئی ہے اور افغانستان کرکٹ بورڈ (Afghanistan Cricket Board) کے سی ای او حامد شنواری نے واضح کردیا ہے کہ موجودہ حالات میں سیریز کا انعقاد ممکن نہیں ہے۔

    • Share this:
      کابل: افغانستان پر طالبان کا راج ہوگیا ہے اور اس خوف سے کافی تعداد میں لوگ اپنا ملک چھوڑنے کو مجبور ہوگئے ہیں۔ طالبان کے آتے ہی افغانستان میں کافی کچھ بدل گیا ہے۔ حالانکہ طالبان نے افغانستان کرکٹ بورڈ (Afghanistan Cricket Board) کو یہ یقین دہانی کرائی ہے کہ وہ ملک میں کرکٹ میں مداخلت نہیں کرے گا، مگر کرکٹ پر اب اثر نظر آنے لگا ہے۔

      پہلا اثر تو پاکستان اور افغانستان کے درمیان 3 ستمبر سے ہونے والی تین میچوں کی ونڈے سیریز پر پڑا تھا، جسے ملتوی کردیا گیا ہے، جو پہلے سری لنکا میں ہونی تھی۔ دراصل افغانستان کے موجودہ حالات کے سبب کابل سے تجارتی پروازیں منسوخ کردی گئی ہے۔ افغانستان بورڈ کو ٹیم کو باہر بھیجنے کے لئے پریشانی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

      طالبان کے اقتدار کا پہلا اثر پاکستان اور افغانستان کے درمیان 3 ستمبر سے ہونے والی تین میچوں کی ونڈے سیریز پر پڑا تھا، جسے ملتوی کردیا گیا ہے، جو پہلے سری لنکا میں ہونی تھی۔
      طالبان کے اقتدار کا پہلا اثر پاکستان اور افغانستان کے درمیان 3 ستمبر سے ہونے والی تین میچوں کی ونڈے سیریز پر پڑا تھا، جسے ملتوی کردیا گیا ہے، جو پہلے سری لنکا میں ہونی تھی۔


      موجودہ حالات میں سیریز کا انعقاد ممکن نہیں

      اسپورٹ اسٹار کی خبر کے مطابق، بورڈ کے سی ای او حامد شنواری نے کہا کہ ہم نے کھلاڑیوں کی صورتحال اور ذہنی صحت کو دھیان میں رکھتے ہوئے ٹورنامنٹ کو ملتوی کرنے کا آپسی رضامندی سے فیصلہ کیا ہے۔ اس سے قبل کچھ میڈیا رپورٹس کے مطابق، کہا جارہا تھا کہ سیریز کو پاکستان شفٹ کیا جائے گا، مگر حامد شنواری نے کہا کہ موجودہ حالات میں سیریز کا انعقاد ممکن نہیں ہے۔

      حامد شنواری نے کہا کہ پاکستان کرکٹ بورڈ اور سری لنکا بورڈ نے سیریز کی میزبانی کرنے میں ہماری مدد کرنے کے لئے کافی سپورٹ کیا تھا، مگر موجودہ حالات میں اس کا انعقاد ممکن نہیں ہے۔ یہ لیگ 2023 عالمی کپ کے لئے آئی سی سی کوالیفائنگ لیگ کا حصہ ہے۔ حامد شنواری نے کہا کہ ہم نے آئی سی سی کو لوپ میں رکھا ہے اور 2023 عالمی کپ سے پہلے کوئی ممکنہ تاریخ دیں گے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: