ہوم » نیوز » اسپورٹس

دس میچوں میں 51 وکٹ لینے والا گیند بازبھی غریبی میں جینے کومجبور، نہیں مل رہی ہے نوکری

راجستھان کے دھولپورکے رہنے والے تنویرالحق 4 سال سے فرسٹ کلاس کرکٹ کھیل رہے ہیں۔ تاہم ابھی بھی انہیں گھرچلانے میں پریشانی کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔

  • Share this:
دس میچوں میں 51 وکٹ لینے والا گیند بازبھی غریبی میں جینے کومجبور، نہیں مل رہی ہے نوکری
تنویرالحق: فائل فوٹو

راجستھان کےتیزگیند بازتنویرالحق گزشتہ رنجی سیزن میں سب سے زیادہ وکٹ لینے والے تیزگیند بازتھے۔ انہوں نے10 میچ میں 18.52 کی اوسط سے51 وکٹ لئےتھےاور19-2018 رنجی سیزن میں وکٹ لینےکےمعاملے میں پانچویں نمبرپررہےتھے، لیکن یہ گیند باز اب بھی ایک نوکری کا انتظارکررہا ہے۔ راجستھان کےدھولپورکےرہنے والے تنویرالحق 4 سال سے فرسٹ کلاس کرکٹ کھیل رہے ہیں۔ تاہم ابھی بھی انہیں گھرچلانے میں پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔


مشکل سے چل رہا ہے گھر


ٹائمس آف انڈیا کوتنویرنے بتایا کہ ان کے پاس ابھی بھی ایسے نوکری نہیں ہے، جس کے سہارے رہا جائے۔ انہوں نے بتایا کہ 'کرکٹ سے جوبھی پیسہ ملتا ہے، وہ ٹریننگ اورفیملی کی مدد میں پورے ہوجاتے ہیں'۔ ان کے والد درجی کا کام کرتے ہیں اورایسے میں گھرکی ضرورتیں بمشکل پوری ہوپاتی ہیں۔ بائیں ہاتھ کے اس تیزگیند بازنے فرسٹ کلاس میں 30 میچ میں 109، میچ میں 109، لسٹ اے کے 15 میچ میں 24 اور11 ٹی  20 مقابلوں میں 13 وکٹ لئے ہیں۔


دس سال پہلے غائب ہوگئے تھے اصلی دستاویز

تنویرالحق 2009 میں جے پورمیں واچ مین کی نوکری کے لئے گئے تھے۔ اس وقت ان کی ڈگریاں اورباقی سرٹیفکیٹ کھوگئے تھے۔ اس کے بعد سے ہی نوکری کے لئے پریشان ہونا پڑ رہا ہے۔ وہ جے پورمیں کرائے کے کمرے میں رہتے ہیں۔ انہوں نے کہا 'اس سے اخراجات بڑھ گئے ہیں۔ اقتصادی طورپرحالات ٹھیک نہیں ہے۔ مشکل سے کام چلتا ہے'۔

تنویرالحق 4 سال سے گھریلو کرکٹ کھیل رہے ہیں۔
تنویرالحق 4 سال سے گھریلو کرکٹ کھیل رہے ہیں۔


انڈیا اے سے کھیلنے پرمل جاتی ہے نوکری

تنویرالحق کوابھی انڈیا اے ٹیم میں جگہ ملی ہے۔ ساتھ ہی دلیپ ٹرافی میں بھی کھیل رہے ہیں۔ اس سے انہیں نوکری ملنے کی امید میں اضافہ ہوگیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ اس سیزن میں اچھی کارکردگی کے دم پرآئی پی ایل میں موقع ملنے کی امید ہے۔ ہوسکتا ہے کہ اچھی کارکردگی کے سبب ٹیم انڈیا میں کھیلنے کا موقع مل سکے۔ کسی نےکہا کہ انڈیا اے کےلئےکھیلنے پر نوکری مل جاتی ہے، اسی کی امید ہے۔

آئی پی ایل سے ہے اچھے دن کی امید

تنویرالھق اس امید میں بھی ہیں کہ آئندہ آئی پی ایل میں انہیں کسی ٹیم سے بلاوا آجائے۔ اس سال آئی پی ایل سےقبل انہیں راجستھان رائلس نےٹرائل کےلئےبلایا تھا۔ حالانکہ ان سے ڈیتھ بالنگ سدھارنےکوکہا تھا۔ تنویرالحق اسی کمی کوسدھارنے میں مصروف ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ آنے والے مہینوں میں وجے ہزارے اورسید مشتاق علی ٹرافی میں اچھی کارکردگی کے ذریعہ دعویداری کرنے پرزورہوگا۔
First published: Sep 01, 2019 08:51 PM IST