உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    IPL میں پہلی بار ہوا ایسا، جب چنئی سپرکنگس کا کوئی بھی بلے باز نہیں بنا پایا 400 رن

    آئی پی ایل کے 15ویں سیزن میں چنئی سپرکنگس کی کارکردگی بے حد شرمناک رہی۔ ایم ایس دھونی کی ٹیم پلے آف میں جگہ بنانے میں ناکام رہی۔ چنئی سپرکنگس نے اس سیزن میں 14 میچ کھیلے، جن میں 4 میچ جیتے اور 10 ہارے۔ چنئی کی ٹیم پہلی بار آئی پی ایل میں 10 میچ ہاری ہے۔ لیگ کی تاریخ میں ایسا پہلی بار ہوا ہے جب چنئی کا کوئی بھی بلے باز ایک سیشن میں 400 رن نہیں بنا پایا۔

    آئی پی ایل کے 15ویں سیزن میں چنئی سپرکنگس کی کارکردگی بے حد شرمناک رہی۔ ایم ایس دھونی کی ٹیم پلے آف میں جگہ بنانے میں ناکام رہی۔ چنئی سپرکنگس نے اس سیزن میں 14 میچ کھیلے، جن میں 4 میچ جیتے اور 10 ہارے۔ چنئی کی ٹیم پہلی بار آئی پی ایل میں 10 میچ ہاری ہے۔ لیگ کی تاریخ میں ایسا پہلی بار ہوا ہے جب چنئی کا کوئی بھی بلے باز ایک سیشن میں 400 رن نہیں بنا پایا۔

    آئی پی ایل کے 15ویں سیزن میں چنئی سپرکنگس کی کارکردگی بے حد شرمناک رہی۔ ایم ایس دھونی کی ٹیم پلے آف میں جگہ بنانے میں ناکام رہی۔ چنئی سپرکنگس نے اس سیزن میں 14 میچ کھیلے، جن میں 4 میچ جیتے اور 10 ہارے۔ چنئی کی ٹیم پہلی بار آئی پی ایل میں 10 میچ ہاری ہے۔ لیگ کی تاریخ میں ایسا پہلی بار ہوا ہے جب چنئی کا کوئی بھی بلے باز ایک سیشن میں 400 رن نہیں بنا پایا۔

    • Share this:
      نئی دہلی: آئی پی ایل 2022 میں 20 مئی کو چنئی سپرکنگس اور راجستھان رائلس کے درمیان میچ کھیلا گیا۔ اس مقابلے میں چنئی سپر کنگس نے پہلے بلے بازی کرتے ہوئے 6 وکٹ پر 150 رن بنائے۔ چنئی کی طرف سے معین علی نے شاندار 93 رنوں کی اننگ کھیلی۔ جبکہ مہندر سنگھ دھونی کے بلے سے 26 رن نکلے۔ جیت کے لئے 151 رنوں کا ہدف راجستھان رائلس نے 5 وکٹ کے نقصان پر 19.4 اوور میں پورا کرلیا۔ اس شکست کے بعد آئی پی ایل 2022 میں چنئی سپرکنگس کا سفر ختم ہوگیا۔

      اس سیزن میں چنئی سپرکنگس کی یہ 10ویں شکست تھی۔ آئی پی ایل 2022 میں چنئی سپرکنگس کی ٹیم صرف چار میچ جیت پائی۔ 8 پوائنٹ کے ساتھ ٹیم پوائنٹ ٹیبل میں 9ویں مقام پر رہی۔ 15ویں سیشن میں پورے سیزن چنئی سپر کنگس کی ٹیم جدوجہد کرتی رہی۔اس کے گیند بازوں اور بلے بازوں نے کافی مایوس کیا۔ آئی پی ایل تاریخ پر نظر ڈالی جائے تو ایسا پہلی بار ہوا ہے، جب ایک سیشن میں چنئی سپرکنگس کا کوئی بھی بلے باز 400 رن نہیں بنا سکا۔

      ریتو راج ٹاپ اسکورر

      آئی پی ایل 2022 میں چنئی سپرککنگس کے سب سے کامیاب بلے باز ریتو راج گائیکواڑ رہے۔ اس سیزن میں انہوں نے چنئی سپر کنگس کے لئے سبھی 14 میچ کھیلے، جن میں 368 رن بنائے۔ 15ویں سیزن میں ان کا سب سے بہترین اسکور 99 رن رہا۔ اس دوران ان کے بلے سے 3 نصف سنچری نکلی۔ ان کے علاوہ شیوم دوبے 11 میچوں میں 289 رن، امباتی رائیڈو 13 میچ میں 274 رن، ڈیون کانوے 7 میچ میں 252 رن، معین علی 10 میچ میں 244 رن، ایم ایس دھونی 14 میچ میں 232 رن، رابن اتھپا 12 میچ میں 230 رن بناپائے۔ کل ملاکر اس سیزن میں چنئی سپرکنگس کا کوئی بلے باز 400 رنوں کے اعدادوشمار تک نہیں پہنچ پایا۔

      ایک سیزن میں 400 رن بنانے والے بلے باز

      اس سیشن کو اگر چھوڑ دیا جائے تو چنئی سپرکنگس کے لئے ہر ایک سیزن میں کسی نہ کسی بلے باز نے 400 یا اس سے زیادہ رن بنائے ہیں۔ آئیے اعدادوشمار پر ایک نظر ڈالتے ہیں۔ سال 2008 میں سریش رینا اور ایم ایس دھونی، سال 2009 میں سریش رینا اور میتھیو ہیڈن، سال 2010 میں سریش رینا اور مرلی وجے، سال 2011 میں سریش رینا، مرلی وجے اور مائیکل ہسی، سال 2012 میں سریش رینا، سال 2013 میں سریش رینا، ایم ایس دھونی اور مائیکل ہسی، سال 2014 میں سریش رینا، ڈیون اسمتھ، برینڈن میک کولم، سال 2015 میں برینڈن میک کولم، سال 2018 میں سریش رینا، ایم ایس دھونی، شین واٹسن، امباتی رائیڈو، سال 2019 میں ایم ایس دھونی، سال 2020 میں فاف ڈوپلیسی، وہیں سال 2021 میں فاف ڈوپلیسی اور ریتو راج گائیکواڑ نے 400 یا اس سے زیادہ رن بنائے تھے۔ جبکہ آئی پی ایل 2022 میں چنئی سپرکنگس کا کوئی بھی بلے باز 400 یا اس سے زیادہ کا اعدادوشمار نہیں پار کرسکا۔

       
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: