ہوم » نیوز » اسپورٹس

کرکٹ میں بدعنوانی کامعاملہ :کرپشن میں ملوث یواے ای کےکھلاڑیوں کوسخت سزاؤں کااعلان

سابق کپتان محمد نوید اور شیمان انور بٹ پر 8 برس کیلئے کرکٹ کے دروازے بند کردیئے گئے۔آئی سی سی اینٹی کرپشن ٹربیونل نے یو اے ای کے سابق کپتان محمد نوید اور شیمان انور کو اینٹی کرپشن کوڈ کی خلاف ورزی کا مرتکب قرار دیا تھا، اب دونوں پر 8، 8 برس کیلئے کرکٹ کے دروازے بند کردیئے گئے

  • UNI
  • Last Updated: Mar 17, 2021 12:55 PM IST
  • Share this:
کرکٹ میں بدعنوانی کامعاملہ :کرپشن میں ملوث یواے ای کےکھلاڑیوں کوسخت سزاؤں کااعلان
محمد نوید اور شیمان انور بٹ پر 8 برس کیلئے کرکٹ کے دروازے بند کردیئے گئے

کرکٹ میں بدعنوانی اب خوشحال متحدہ عرب امارات جیسے ممالک کے کھلاڑی بھی کرنے لگے ہیں۔اور اسی کرپشن کی پاداش میں اس ملک کے ’داغدارکرکٹرز‘ کیفرکردار تک پہنچ گئے جب کہ سابق کپتان محمد نوید اور شیمان انور بٹ پر 8 برس کیلئے کرکٹ کے دروازے بند کردیئے گئے۔آئی سی سی اینٹی کرپشن ٹربیونل نے یو اے ای کے سابق کپتان محمد نوید اور شیمان انور کو اینٹی کرپشن کوڈ کی خلاف ورزی کا مرتکب قرار دیا تھا، اب دونوں پر 8، 8 برس کیلئے کرکٹ کے دروازے بند کردیئے گئے، سزا کی مدت 16 اکتوبر 2019 سے شمار ہوگی جب انھیں معطل کیا گیا تھا، جس کے بعد دونوں کے خلاف غیرجانبدار ٹربیونل میں کارروائی کا آغاز ہوا، جس میں دونوں طرف سے تحریری اور زبانی دلائل دیئے گئے۔


ٹربیونل نے نوید اور شیمان کو آرٹیکل 2.1.1 اور 2.4.4 کی خلاف ورزی کا مرتکب قرار دیا، جس کے تحت دونوں ورلڈ کپ کوالیفائر2019 کے نتائج پر اثر انداز ہونے، رپورٹ نہ کرنے اور تحقیقات میں تعاون نہ کرنے میں ملوث پائے گئے۔نوید کو متحدہ عرب امارات کے بھی اینٹی کرپشن کوڈ کی 2 شقوں کی خلاف ورزی کا مرتکب قرار دیا گیا، انھوں نے یواے ای میں 2019 میں کھیلے گئی ٹی 10 لیگ میں بھی کرپشن کی کوشش کی تھی۔



آئی سی سی انٹیگریٹی یونٹ کے جنرل منیجر الیکس مارشل نے سزاؤں کی مدت پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ نوید اور شیمان نے یواے ای کی کرکٹ میں ٹاپ لیول پر نمائندگی کی، نوید کپتان اور ملک کیلئے سب سے زیادہ وکٹیں لینے والے گیند باز تھے، شیمان نے اوپننگ بیٹسمین کے طور پر اپنی صلاحیتوں کا مظاہرہ کیا مگر دونوں کرپٹ سرگرمیوں میں ملوث ہوگئے۔اس طرح انہوں نے اپنے ساتھیوں اور یواے ای کرکٹ کے تمام مداحوں اور حامیوں کو دھوکا دیا، میں ٹریبیونل کی طرف سے دی گئی سزا سے مطمئن ہوں ،اور یہ ان تمام کرکٹرز کیلیے وارننگ ہے جو کرپشن کا ارادہ رکھتے ہیں۔
Published by: Mirzaghani Baig
First published: Mar 17, 2021 12:55 PM IST