உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    وراٹ کوہلی نے سوربھ گانگولی کے دعوے پر اٹھایا سوال، بولے- مجھے کبھی کپتان بنے رہنے کے لئے نہیں کہا

    وراٹ کوہلی نے ونڈے ٹیم کی کپتانی چھینے جانے پر بھی بڑا بیان دے دیا۔ ہندوستانی ٹسٹ کپتان کا کہنا ہے کہ 8 دسمبر کو جنوبی افریقہ کے لئے ہندوستان کی ٹسٹ ٹیم کے اعلان سے صرف ڈیڑھ گھنٹے پہلے انہیں ونڈے ٹیم کے کپتان عہدے سے ہٹائے جانے کے بارے میں بتایا گیا۔

    وراٹ کوہلی نے ونڈے ٹیم کی کپتانی چھینے جانے پر بھی بڑا بیان دے دیا۔ ہندوستانی ٹسٹ کپتان کا کہنا ہے کہ 8 دسمبر کو جنوبی افریقہ کے لئے ہندوستان کی ٹسٹ ٹیم کے اعلان سے صرف ڈیڑھ گھنٹے پہلے انہیں ونڈے ٹیم کے کپتان عہدے سے ہٹائے جانے کے بارے میں بتایا گیا۔

    وراٹ کوہلی نے ونڈے ٹیم کی کپتانی چھینے جانے پر بھی بڑا بیان دے دیا۔ ہندوستانی ٹسٹ کپتان کا کہنا ہے کہ 8 دسمبر کو جنوبی افریقہ کے لئے ہندوستان کی ٹسٹ ٹیم کے اعلان سے صرف ڈیڑھ گھنٹے پہلے انہیں ونڈے ٹیم کے کپتان عہدے سے ہٹائے جانے کے بارے میں بتایا گیا۔

    • Share this:
      نئی دہلی: ہندوستان کے ٹسٹ کپتان وراٹ کوہلی (Virat Kohli) نے واضح کیا کہ وہ جنوبی افریقہ (India vs South Africa) میں آئندہ ونڈے سیریز میں کھیلیں گے۔ وراٹ کوہلی کے پریس کانفرنس سے ان کی دستیابی اور محدود اووروں کی ٹیم کے نئے کپتان روہت شرما (Rohit Sharma) کے ساتھ ان کے حالات کو لے کر چل رہی قیاس آرائیوں پر بریک لگ گیا۔ اس کے علاوہ وراٹ کوہلی نے ونڈے ٹیم کی کپتانی چھینے جانے پر بھی بڑا بیان دے دیا۔ ہندوستانی ٹسٹ کپتان کا کہنا ہے کہ 8 دسمبر کو جنوبی افریقہ کے لئے ہندوستان کی ٹسٹ ٹیم کے اعلان سے صرف ڈیڑھ گھنٹے پہلے انہیں ونڈے ٹیم کے کپتان عہدے سے ہٹائے جانے کے بارے میں بتایا گیا۔

      روہت شرما کو 8 دسمبر کو ہندوستانی کرکٹ ٹیم کی ونڈے کی کمان سونپ دی گئی تھی۔ اس سے پہلے وراٹ کوہلی کے ٹی-20 کپتان چھوڑنے کے بعد انہیں ٹی-20 ٹیم کا کپتان کی کپتانی چھوڑنے کے بعد بی سی سی آئی صدر سوربھ گانگولی نے ایک انٹرویو میں کہا تھا کہ انہوں نے کوہلی سے گزارش کی تھی کہ وہ ٹی-20 ٹیم کی کپتانی نہ چھوڑیں، لیکن وراٹ کوہلی کا کہنا ہے کہ ٹی-20 ٹیم کی کپتانی چھوڑنے کے بعد ان کی بی سی سی آئی سے اس مسئلے پر کوئی بات نہیں ہوئی۔ انہیں کبھی بھی ٹی-20 ٹیم کی کپتانی چھوڑنے کے بعد ان کی بی سی سی آئی سے اس مسئلے پر کوئی بات نہیں ہوئی۔ انہیں کبھی بھی ٹی-20 ٹیم کی کپتانی نہیں چھوڑنے کی اپیل کی گئی تھی۔

      وراٹ کوہلی نے جنوبی افریقہ دورے سے پہلے پریس کانفرنس میں کہا، ‘میں سلیکشن کے لئے دستیاب تھا اور میں ہمیشہ سلیکشن کے لئے دستیاب ہوں۔ میں نے بی سی سی آئی سے آرام کے لئے کبھی رابطہ نہیں کیا۔ میں جنوبی افریقہ میں ونڈے سیریز کے لئے دستیاب ہوں اور پہلے بھی دستیاب تھا‘۔ انہوں نے کہا، ’یہ ان لوگوں سے پوچھا جانا چاہئے جنہوں نے جھوٹ لکھا ہے۔ اس موضوع پر بی سی سی آئی کے ساتھ میری بات چیت نہیں ہوئی ہے کہ میں آرام کرنا چاہتا ہوں‘۔

      وراٹ کوہلی نے جنوبی افریقہ دورے سے پہلے پریس کانفرنس میں کہا، ‘میں سلیکشن کے لئے دستیاب تھا اور میں ہمیشہ سلیکشن کے لئے دستیاب ہوں۔ میں نے بی سی سی آئی سے آرام کے لئے کبھی رابطہ نہیں کیا۔ میں جنوبی افریقہ میں ونڈے سیریز کے لئے دستیاب ہوں اور پہلے بھی دستیاب تھا‘۔
      وراٹ کوہلی نے جنوبی افریقہ دورے سے پہلے پریس کانفرنس میں کہا، ‘میں سلیکشن کے لئے دستیاب تھا اور میں ہمیشہ سلیکشن کے لئے دستیاب ہوں۔ میں نے بی سی سی آئی سے آرام کے لئے کبھی رابطہ نہیں کیا۔ میں جنوبی افریقہ میں ونڈے سیریز کے لئے دستیاب ہوں اور پہلے بھی دستیاب تھا‘۔


      دراصل، گزشتہ دو دنوں سے قیاس آرائی کی جارہی تھی کہ وراٹ کوہلی اور ٹسٹ نائب کپتان روہت شرما کے درمیان سب کچھ ٹھیک نہیں چل رہا ہے۔ روہت شرما نسوں میں کھنچاو کے سبب ٹسٹ سیریز میں نہیں کھیل پائیں گے۔ روہت شرما کے ٹسٹ سیریز سے باہر ہونے کے بعد رپورٹ آئی کہ وراٹ کوہلی اپنی فیملی کے ساتھ وقت گزارنے کے لئے ونڈے سیریز سے آرام لیں گے۔ ایسا روہت شرما کو ونڈے اور ٹی-20 ٹیموں کی کمان سونپے جانے کے بعد ہوا، جس کی جانکاری بی سی سی آئی نے سیریز کے لئے ٹیم اعلان کرتے ہوئے پریس ریلیز میں دی تھی۔

      وراٹ کوہلی نے متحدہ عرب امارات میں ٹی-20 ٹیم کی کپتانی چھوڑ دیں گے۔ اس بارے میں مسلسل چل رہی قیاس آرائیوں کے بارے میں وراٹ کوہلی نے کہا، ’بہت سی چیزیں تو باہر ہوتی ہیں، وہ آدرش نہیں ہوتی ہیں اور وہ ہمیشہ ویسی نہیں ہوتیں، جیسا کہ کوئی امید کرتا ہے‘۔ انہوں نے کہا، ‘لیکن آپ کو یہ سمجھنا ہوگا کہ آپ ایک شخص کے طور پر صرف اتنا ہی کرسکتے ہیں اور ہمیں وہی چیزیں کرنی ہیں، جو آپ ایک شخص کے طور پر منظم طریقے سے کرسکتے ہیں۔ میں پوری طرح سے پابند عہد ہوں اور ذہنی طور پر تیار ہوں‘۔


      قومی، بین الااقوامی، جموں و کشمیر کی تازہ ترین خبروں کے علاوہ  تعلیم و روزگار اور بزنس  کی خبروں کے لیے  نیوز18 اردو کو ٹویٹر اور فیس بک پر فالو کریں.

      Published by:Nisar Ahmad
      First published: