உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    وراٹ کوہلی دنیا کے ٹاپ-8 کھلاڑیوں سے نکلے آگے، لیکن 30 سال کا پاکستانی بلے باز پڑا ہے پیچھے

    وراٹ کوہلی دنیا کے ٹاپ-8 کھلاڑیوں سے نکلے آگے

    وراٹ کوہلی دنیا کے ٹاپ-8 کھلاڑیوں سے نکلے آگے

    Asia Cup 2022: وراٹ کوہلی نے گزشتہ دنوں ٹی20 انٹرنیشنل کرکٹ کی اپنی پہلی سنچری لگائی۔ انہوں نے 2010 میں ٹی20 میں ڈیبیو کیا تھا۔ یعنی 12 سال بعد وہ اپنی پہلی سنچری لگانے میں کامیاب رہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Delhi, India
    • Share this:
      نئی دہلی: وراٹ کوہلی (Virat Kohli) نے 12 سال پہلے 2010 میں زمبابوے کے خلاف ٹی20 انٹرنیشنل میں قدم رکھا تھا۔ انہوں نے گزشتہ دنوں  ٹی20 ایشیا کپ 2022 (Asia Cup 2022) کے دوران افغانستان کے خلاف ناٹ آوٹ 122 رنوں کی اننگ کھیلی۔ یہ ان کی ٹی20 انٹرنیشنل کی پہلی سنچری ہے۔ یعنی اس کے لئے انہیں 12  سال تک انتظار کرنا پڑا۔

      ٹی20 ٹورنا منٹ کی بات کریں، تو وہ ابھی سب سے زیادہ رن بنانے والے کھلاڑی ہیں اور صرف ایک میچ بچا ہے۔ فائنل مقابلہ کل پاکستان اور سری لنکا کے درمیان ہونا ہے۔ صرف 30 سال کے محمد رضوان (Mohammad Rizwan) ہی انہیں پیچھے چھوڑ سکتے ہیں۔ دیگر کے لئے یہ کافی مشکل کام ہے۔

      وراٹ کوہلی کو صرف پاکستان کے محمد رضوان ہی انہیں پیچھے چھوڑ سکتے ہیں۔ دیگر کے لئے یہ کافی مشکل کام ہے۔
      وراٹ کوہلی کو صرف پاکستان کے محمد رضوان ہی انہیں پیچھے چھوڑ سکتے ہیں۔ دیگر کے لئے یہ کافی مشکل کام ہے۔


      وراٹ کوہلی نے پانچ میچ میں 92 کی اوسط سے 276 رن بنائے۔ ایک سنچری اور دو نصف سنچری لگائی۔ اس دوران ان کا اسٹرائیک ریٹ 148 کا رہا۔ وہیں محمد رضوان نے 5 میچوں میں 226 رن بنائے ہیں۔ دو نصف سنچری لگائی ہے۔ وہ ابھی رینکنگ میں نمبر-1 پر قابض ہیں۔ دیگر کوئی بلے باز 200 رن کے اعدادوشمار تک نہیں پہنچ سکا ہے۔ وراٹ کوہلی ابھی آئی سی سی ٹی20 رینکنگ میں 29ویں نمبر پر ہیں، لیکن انہوں نے اپنے سے اونچی رینکنگ والے 8 بلے بازوں سے ایشیا کپ میں زیادہ رن بنائے ہیں۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      شعیب اختر نے وراٹ کوہلی کو ’مین آف اسٹیل‘ اور انوشکا شرما کو بتایا ‘آئرن لیڈی‘، جانیں کیوں؟

      یہ بھی پڑھیں۔
      Asia Cup 2022: روہت شرما اینڈکمپنی کی خراب کارکردگی... T20 World Cup سے پہلے ٹھنے لگے سوال

      نمبر-2 تو آس پاس بھی نہیں

      بابر اعظم ٹی20 رینکنگ میں دوسرے نمبر پر ہیں، لیکن وہ ٹورنا منٹ میں اب تک بری طرح فلاپ رہے ہیں اور اب تک ایک بھی نصف سنچری نہیں لگائی ہے۔ انہوں نے پانچ میچوں میں 13 کی اوسط سے 63 رن بنائے ہیں۔ نمبر-4 پر قابض سوریہ کمار یادو نے ایک نصف سنچری کے سہارے 139 رن بنائے۔ رینکنگ میں آٹھویں نمبر پر قابض سری لنکا کے پتھم نسانکا نے ابھی تک دو نصف سنچری کے سہارے 165 رن بنائے ہیں۔ انہیں وراٹ کوہلی کو پیچھے چھوڑنے کے لئے سنچری اننگ کھیلنی ہوگی۔

      ہندوستانی کپتان روہت شرما نے ایشیا کپ میں 133، افغانستان کے رحمٰن اللہ گرباز نے 152، حضرت اللہ ججئی نے 93 اور یہیں کے نجیب اللہ نے 72 رن بنائے۔ یہ سبھی آئی سی سی رینکنگ میں وراٹ کوہلی سے آگے ہیں، لیکن ان سے زیادہ رن نہیں بنا سکے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: