உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    روہت شرما کو کپتانی سے ہٹانا چاہتے وراٹ کوہلی! بی سی سی آئی نے نہیں مانی کپتان کی بات

    روہت شرما کو کپتانی سے ہٹانا چاہتے وراٹ کوہلی! بی سی سی آئی نے نہیں مانی کپتان کی بات

    روہت شرما کو کپتانی سے ہٹانا چاہتے وراٹ کوہلی! بی سی سی آئی نے نہیں مانی کپتان کی بات

    وراٹ کوہلی (Virat Kohli) نے ٹی-20 عالمی کپ (T20 World Cup) کے بعد ٹی-20 کپتانی چھوڑنے کا اعلان کردیا ہے۔ ایک رپورٹ کے مطابق، کوہلی نے روہت شرما کو نائب کپتانی سے ہٹانے کی کوشش کی تھی۔ روہت شرما (Rohit Sharma) کی جگہ ونڈے میں کے ایل راہل (KL Rahul) اور ٹی-20 میں رشبھ پنت (Rishabh Pant) کو نائب کپتان بنانا چاہتے تھے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Share this:
      نئی دہلی: وراٹ کوہلی (Virat Kohli) کے ٹی-20 کی کپتانی چھوڑنے کے اعلان کے ساتھ ہی ٹیم انڈیا (Team India) کے ڈریسنگ روم سے کئی بڑی خبریں سامنے آرہی ہیں۔ ایک رپورٹ کے مطابق، اب وراٹ کوہلی کو ہندوستانی ٹیم کے سبھی کھلاڑیوں کی حمایت حاصل نہیں ہے۔ وراٹ کوہلی کے کئی فیصلوں پر سوالیہ نشان کھڑے کئے جا رہے ہیں۔ بڑی خبر یہ ہے کہ وراٹ کوہلی نے  بی سی سی آئی (BCCI) کے سلیکٹروں کو تجویز پیش کی تھی کہ وہ روہت شرما (Rohit Sharma) کو نائب کپتانی سے ہٹا دیں۔ وراٹ کوہلی کے خلاف جونیئر کھلاڑیوں کو منجھدار میں چھوڑنے کی باتیں بھی کہی جارہی ہیں۔

      نیوز ایجنسی پی ٹی آئی کے مطابق، وراٹ کوہلی سلیکشن کمیٹی کے پاس یہ تجویز لے کر گئے تھے کہ روہت شرما کو ونڈے ٹیم کی نائب کپتانی سے ہٹا دیا جائے کیونکہ وہ 34 سال کے ہیں۔ وہ چاہتے ہیں کہ ونڈے ٹیم کی نائب کپتانی کے ایل راہل کو سونپی جائے جبکہ ٹی-20 فارمیٹ میں یہ ذمہ داری رشبھ پنت نبھائیں۔ ذرائع نے کہا، ’بورڈ کو یہ پسند نہیں آیا، کیونکہ بورڈ کا ماننا ہے کہ کوہلی اصل جانشین نہیں چاہتے‘۔

      وراٹ کوہلی (Virat Kohli) کے ٹی-20 کی کپتانی چھوڑنے کے اعلان کے ساتھ ہی ٹیم انڈیا (Team India) کے ڈریسنگ روم سے کئی بڑی خبریں سامنے آرہی ہیں۔
      وراٹ کوہلی (Virat Kohli) کے ٹی-20 کی کپتانی چھوڑنے کے اعلان کے ساتھ ہی ٹیم انڈیا (Team India) کے ڈریسنگ روم سے کئی بڑی خبریں سامنے آرہی ہیں۔


      وراٹ کوہلی جونیئر کھلاڑیوں کو منجھدار میں چھوڑ دیتے ہیں

      جہاں تک جونیئر کھلاڑیوں کا سوال ہے تو وراٹ کوہلی کے خلاف سب سے بڑی شکایت یہ ہے کہ وہ مشکل وقت میں انہیں منجدھار میں چھوڑ دیتے ہیں۔ ایک دیگر کرکٹر نے کہا، ’آسٹریلیا میں پانچ وکٹ کے بعد کلدیپ یادو منصوبوں سے باہر ہوگیا۔ رشبھ پنت جب فارم میں نہیں تھا تو اس کے ساتھ بھی ایسا ہی ہوا۔ ہندوستانی پچوں پر بہترین کارکردگی کرنے والے سینئر گیند باز امیش یادو کو کبھی یہ جواب نہیں ملا کہ کسی کے زخمی ہونے تک ان کے پر غور کیوں نہیں کیا جاتا‘۔

      وراٹ کوہلی سلیکشن کمیٹی کے پاس یہ تجویز لے کر گئے تھے کہ روہت شرما کو ونڈے ٹیم کی نائب کپتانی سے ہٹا دیا جائے کیونکہ وہ 34 سال کے ہیں۔
      وراٹ کوہلی سلیکشن کمیٹی کے پاس یہ تجویز لے کر گئے تھے کہ روہت شرما کو ونڈے ٹیم کی نائب کپتانی سے ہٹا دیا جائے کیونکہ وہ 34 سال کے ہیں۔


      وراٹ کوہلی کے ساتھ بات چیت کا مسئلہ

      ایک سابق کھلاڑی نے غیر رسمی بات چیت کے دوران پی ٹی آئی سے کہا تھا، ’وراٹ کوہلی کے ساتھ پریشانی بات چیت کی ہے۔ مہندر سنگھ دھونی کے معاملے میں، اس کا کمرہ 24 گھنٹے کھلا رہتا تھا اور کھلاڑی اندر جاسکتا تھا، ویڈیو گیم کھیل سکتا تھا، کھانا کھا سکتا تھا اور ضرورت پڑنے پر کرکٹ کے بارے میں بات کرسکتا تھا‘۔ انہوں نے کہا، ’میدان کے باہر وراٹ کوہلی سے رابطہ کرپانا بے حد مشکل ہے‘۔ سابق کرکٹر نے کہا، ’روہت شرما میں دھونی کی جھلک ہے، لیکن الگ طریقے سے۔ وہ جونیئر کھلاڑیوں کو کھانے پر لے جاتا ہے، جب وہ مایوس ہوتے ہیں تو ان کی پیٹھ تھپتھپاتا ہے اور اسے کھلاڑیوں کے ذہنی پہلو کے بارے میں پتہ ہے‘۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: