ہوم » نیوز » اسپورٹس

وہاب ریاض نے کھولی پاکستان کرکٹ بورڈ کی پول، پوچھا- سینئر کھلاڑیوں سے کیا ہے پریشانی

پاکستان کے تیز گیند باز وہاب ریاض (Wahab Riaz) نےکہا کہ وہ اپنی حالیہ کارکردگی کے بعد انگلینڈ اور ویسٹ انڈیز دورے کے لئے ٹیم سے باہر ہونے سے مایوس ہیں۔ انہوں نے پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کی سلیکشن کمیٹی پر سوال اٹھائے ہیں۔

  • Share this:
وہاب ریاض نے کھولی پاکستان کرکٹ بورڈ کی پول، پوچھا- سینئر کھلاڑیوں سے کیا ہے پریشانی
پاکستان کے تیز گیند باز وہاب ریاض (Wahab Riaz) نےکہا کہ وہ اپنی حالیہ کارکردگی کے بعد انگلینڈ اور ویسٹ انڈیز دورے کے لئے ٹیم سے باہر ہونے سے مایوس ہیں۔ انہوں نے پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کی سلیکشن کمیٹی پر سوال اٹھائے ہیں۔

پاکستان کے تجربہ کار تیز گیند باز وہاب ریاض (Wahab Riaz) انگلینڈ اور ویسٹ انڈیز کے خلاف آئندہ سیریز کے لئے پاکستانی ٹیم سے باہر ہونے پر مایوس ہیں، لیکن ان کا 17 اکتوبر سے متحدہ عرب امارات (ابوظہبی) اور عمان میں شروع ہونے والے آئی سی سی ٹی-20 عالمی کپ (T20 World Cup) میں کھیلنے کا خواب نہیں ٹوٹا ہے۔ بائیں ہاتھ کے اس تیز گیند باز نے کہا کہ انہیں اس بات کی اطلاع نہیں ہے کہ سینئر کھلاڑیوں کے لئے پاکستان کے سلیکٹروں کا کس طرح کا منصوبہ ہے۔


وہاب ریاض نے کہا، ’ظاہر ہے، میں اپنی حالیہ کارکردگی کے بعد انگلینڈ اور ویسٹ انڈیز دورے کے لئے ٹیم سے باہر ہونے سے مایوس ہیں۔ ٹیم میں سلیکشن کا پیمانہ سلیکشن کمیٹی کے لئے ایک سوال ہے، لیکن مجھے لگتا ہے کہ جو بھی اچھی کارکردگی کرتا ہے، اسے منتخب کیا جانا چاہئے‘۔ انہوں نے کہا، ’ان کے پاس اپنی وجوہات ہوسکتی ہیں، لیکن ایک سینئر کھلاڑی کے طور پر میں ٹیم میں جگہ نہ بنا پانے سے محروم ہوں‘۔ اس 36 سال کے گیند باز نے پاکستان کے لئے 27 ٹسٹ، 91 ونڈے اور 36 ٹی -20 بین الاقوامی میچوں میں کل 237 وکٹ حاصل کئے ہیں۔


پاکستانی گیند باز وہاب ریاض نے کہا، ’میں نے اس سال ٹی-20 عالمی کپ میں کھیلنے کی امید نہیں چھوڑی ہے۔ مجھے لگتا ہے کہ سینئر کھلاڑی جب تک فٹ ہیں اور اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کر رہے ہیں، ان کے انتخاب پر غور کیا جانا چاہئے‘۔ انہوں نے سینئر کھلاڑیوں کے لئے سلیکٹروں کی پالیسی پر سوال اٹھاتے ہوئے کہا، ’مجھے نہیں معلوم کہ لوگوں کو سینئر کھلاڑیوں سے کیا پریشانی ہے۔ شاید نوجوان وہی سنتے ہیں، جو انہیں بتایا جاتا ہے، جبکہ سینئرس ہمیشہ معاملوں میں اپنی بات رکھتے ہیں اور آپ کو انہیں سمجھنا ہوتا ہے‘۔


اس درمیان پی سی بی نے مرکزی معاہدہ کے آئندہ سائیکل میں سینئر قومی ٹیموں (مرد اور خاتون) کے ماہانہ تنخواہ میں 10 سے 25 فیصد تک اضافہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ پی سی بی کے گورنرس بورڈ کی جمعرات کو ورچوئل میٹنگ ہوئی، جس میں مرد ٹیم کی میچ فیس میں برابری لانے کا فیصلہ کیا گیا۔

پی سی بی کھلاڑیوں کی تنخواہ میں کرے گا اضافہ

ابھی پی سی بی کھلاڑیوں کی سینئرٹی کی بنیاد پر سالانہ معاہدہ اور میچ فیس طے کرتا ہے۔ بورڈ نے 22-2021 کے مالی سال کے لئے 899 کروڑ روپئے سرگرمی کی بنیاد پر سالانہ بجٹ کو بھی منظوری دی۔ یہ رقم کرکٹ اور دیگر آپریٹنگ سرگرمیوں میں خرچ کی جائے گی۔ اس میں کھلاڑیوں کی بڑھی ہوئی تنخواہ بھی شامل ہے۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Jul 03, 2021 10:51 AM IST