உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Legends League Cricket: کیاہندوستان لیجنڈزلیگ کرکٹ کیلئےپاکستانی کرکٹرزکودےگاویزے؟

    وہ ایل ایل سی کے ایک بہت ہی خاص میچ میں شرکت کریں گے۔

    وہ ایل ایل سی کے ایک بہت ہی خاص میچ میں شرکت کریں گے۔

    صورتحال کے بارے میں پوچھے جانے پر بی سی سی آئی کے چند عہدیدار نے کہا کہ وہ ویزا کے معاملے سے زیادہ واقف نہیں ہیں۔ ایک اہلکار نے آئی اے این ایس کو بتایا کہ میں زیادہ نہیں کہہ سکتا۔ اگر پاکستانی کرکٹرز کو ہماری حکومت سے ویزہ ملے گا تو وہ کھیلیں گے اگر نہیں تو نہیں۔

    • Share this:
      لیجنڈز لیگ کرکٹ (LLC) کا دوسرا ایڈیشن ہندوستان کے چھ شہروں میں کھیلا جائے گا، جس میں کئی ممالک کے کھلاڑی ٹورنامنٹ میں حصہ لے رہے ہیں۔ لیگ کا پہلا سیزن اس سال جنوری میں مسقط، عمان میں تین ٹیموں انڈیا مہاراجہ (- India Maharajas)، ورلڈ جائنٹس (World Giants) اور ایشیا لائنز (Asia Lions) کے درمیان کھیلا گیا تھا اور اس میں سات کھیل شامل تھے۔

      تاہم سیزن 2 میں فرنچائز کی ملکیت والی چار ٹیمیں ہوں گی۔ اس میں 15 میچ ہوں گے، جو 17 ستمبر سے 8 اکتوبر تک چھ شہروں کولکاتہ، لکھنؤ، دہلی، جودھ پور، کٹک اور راجکوٹ میں کھیلے جائیں گے۔ سابق ہندوستانی کپتان اور بی سی سی آئی کے موجودہ صدر سورو گنگولی (Sourav Ganguly) نے بھی تصدیق کی ہے کہ وہ ایل ایل سی کے ایک بہت ہی خاص میچ میں شرکت کریں گے۔

      تاہم منتظمین کے سامنے سب سے بڑی تشویش سابق پاکستانی کرکٹرز کے لیے ویزا کی دستیابی ہے، جو ٹورنامنٹ میں حصہ لینے کے لیے بھی تیار ہیں۔ ایسے سوالات ابھر رہے ہیں کہ کیا بی سی سی آئی یا حکومت ہند نے پاکستان کے ساتھ اپنے کرکٹ تعلقات کے حوالے سے اپنے موقف میں تبدیلی کی ہے۔

      یہ بھی پڑھئے:
      گیٹ 2023 نوٹیفکیشن، 30 اگست سے آن لائن رجسٹریشن، 4 فروری سے امتحان

      قابل ذکر بات یہ ہے کہ ہندوستان اور پاکستان (India and Pakistan) نے تقریباً ایک دہائی سے دو طرفہ سیریز نہیں کھیلی ہے اور دونوں ممالک کے درمیان سیاسی تناؤ کی وجہ سے وہ صرف ایشیا کپ اور آئی سی سی ایونٹس میں ایک دوسرے کا سامنا کرتے ہیں۔ انڈین پریمیئر لیگ (IPL) بھی اس کی اجازت نہیں دیتی ہے۔ پاکستان کے کھلاڑی 2008 میں لیگ کے پہلے سیزن کے علاوہ حصہ لیں گے۔

      یہ بھی پڑھیں:

      MANUU Admission: اردو یونیورسٹی میں فاصلاتی کورسز میں داخلے کیلئے اعلامیہ جاری

      صورتحال کے بارے میں پوچھے جانے پر بی سی سی آئی کے چند عہدیدار نے کہا کہ وہ ویزا کے معاملے سے زیادہ واقف نہیں ہیں۔ ایک اہلکار نے آئی اے این ایس کو بتایا کہ میں زیادہ نہیں کہہ سکتا۔ اگر پاکستانی کرکٹرز کو ہماری حکومت سے ویزہ ملے گا تو وہ کھیلیں گے اگر نہیں تو نہیں۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: