உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    CWG 2022:ساکشی ملک نے0-4 سے پچھڑنے باوجود حریف پہلوان کو دی شکست، گولڈ پر جمایا قبضہ

    ساکشی ملک نے ہندوستان کو برمنگھم کامن ویلتھ گیمس میں دلایا ایک اور گولڈ میڈل۔ (تصویر: سوشل میڈیا)

    ساکشی ملک نے ہندوستان کو برمنگھم کامن ویلتھ گیمس میں دلایا ایک اور گولڈ میڈل۔ (تصویر: سوشل میڈیا)

    Sakshi Malik Wins Gold: ساکشی نے 4-4 سے برابری کرنے کے بعد اگلے ایک منٹ میں میچ کا رخ موڑ دیا اور جیت حاصل کی۔ میچ ساکشی نے 3 منٹ 47 سیکنڈ میں وکٹری بائے فال سے ختم کردیا۔

    • Share this:
      Sakshi Malik Wins Gold: ہندوستان کی تجربہ کار پہلوان اور 2016 کی اولمپک میڈلسٹ ساکشی ملک نے ایک بار پھر ملک کا نام روشن کیا ہے۔ انہوں نے برمنگھم کامن ویلتھ گیمز میں ہندوستان کے لیے گولڈ میڈل جیتا ہے۔ ساکشی نے خواتین کے 62 کلوگرام کے فائنل میں کینیڈا کی اینا گوڈینز گونزالیز کو پن فال سے شکست دی۔ جیت کے بعد میڈل لیتے وقت ساکشی کی آنکھوں میں آنسو تھے۔ قومی ترانے کے دوران وہ رونے لگی۔ گولڈ میڈل جیت کر انہوں نے اہل وطن کو فخر کا موقع فراہم کیا۔

      کامن ویلتھ گیمز میں ساکشی کا یہ پہلا اور مجموعی طور پر تیسرا طلائی تمغہ ہے۔ اس سے پہلے وہ 2014 گلاسگو دولت مشترکہ کھیلوں میں چاندی کا تمغہ اور 2018 کے گولڈ کوسٹ کامن ویلتھ گیمز میں کانسہ کا تمغہ جیت چکی ہیں۔ ساکشی ریو اولمپکس (2016) میں کانسہ کا تمغہ جیتنے میں کامیاب ہوئی تھیں۔ فائنل میں ساکشی نے زبردست کھیل کا مظاہرہ کیا اور ایک موقع پر کافی پوائنٹس سے پیچھے چل رہی ساکشی نے زبردست واپسی کی اور گولڈ پر قبضہ کرلیا۔

      فائنل میں ساکشی کا مقابلہ کینیڈا کی اینا گوڈینیز سے تھا۔ ریسلنگ کا میچ چھ منٹ کا ہوتا ہے۔ فائنل میں، گوڈینیز نے شاندار آغاز کیا اور ساکشی کو دو بار پٹکا۔ پہلے ڈیڑھ منٹ میں گوڈینز نے 4-0 کی برتری حاصل کر لی۔ اس کے بعد بھی کینیڈین پہلوان مسلسل حملے کرتی رہی۔ تیسرے منٹ میں ساکشی نے زبردست واپسی کرتے ہوئے کینیڈین ریسلر کو مات دیتے ہوئے چار پوائنٹ حاصل کر لیے۔


      یہ بھی پڑھیں:

      CWG 2022:مرلی شری شنکر نے لانگ جمپ میں سلور میڈل جیت کر رقم کی تاریخ

      یہ بھی پڑھیں:
      CWG 2022:سدھیر نے ہندوستان کے لئے جیتا چھٹا گولڈ میڈل، بنایا یہ ریکارڈ

      تیسرے منٹ (2 منٹ 15 سیکنڈ) میں اسکور 4-4 سے برابر رہا۔ ساکشی یہیں نہیں رکی، گوڈینیز کو مات دینے کے بعد، اُن پر ایک پن فال کی کوشش کی اور 10 سیکنڈ تک انہیں زمین پر گرائے رکھا۔ اس طرح ساکشی نے 4-4 سے برابری کرنے کے بعد اگلے ایک منٹ میں میچ کا رخ موڑ دیا اور جیت حاصل کی۔ میچ ساکشی نے 3 منٹ 47 سیکنڈ میں وکٹری بائے فال سے ختم کردیا۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: