ہوم » نیوز » اسپورٹس

شعیب اختر کے بعد یونس خان نے بھی لگایا پاکستان کرکٹ بورڈ کو طمانچہ، کھول دی پول

شعیب اختر (Shoaib Akhtar) نے پاکستان کرکٹ بورڈ اور اس کے قانونی شعبہ کو نالائق بتایا تھا، اب یونس خان (Younus Khan) بھی ان کی حمایت میں آگئے ہیں۔

  • Share this:
شعیب اختر کے بعد یونس خان نے بھی لگایا پاکستان کرکٹ بورڈ کو طمانچہ، کھول دی پول
شعیب اختر کے بعد یونس خان نے بھی پی سی بی کو گھیرا۔

کراچی: پاکستان کے سابق کھلاڑی اور دنیا کے سب سے تیزگیند باز شعیب اختر (Shoaib Akhtar) نے پاکستان کرکٹ بورڈ اور اس کے قانونی شعبہ کےلئے نالائق اور نیچ جیسے الفاظ کا استعمال کیا تھا۔ شعیب اختر نے اپنے یو ٹیوب چینل پر پی سی بی کے قانونی مشیر تفضل رضوی پر کھلاڑیوں کے خلاف نجی ایجنڈا چلانے کا بھی بڑا الزام لگایا تھا، جس کے بعد پی سی بی کے قانونی مشیر نے ان کے اوپر 10 کروڑ کا ہتک عزت کا مقدمہ ٹھیک دیا۔ حالانکہ اب شعیب اختر کی حمایت میں یونس خان بھی آکھڑے ہوئے ہیں۔ یونس خان (Younus Khan) نے ٹوئٹ کرکے شعیب اختر کی ہر بات کو صحیح بتایا ہے اور پی سی بی کو مشورہ دیا ہے کہ وہ سدھرجائے۔


شعیب اختر کی حمایت میں آئے یونس خان۔
شعیب اختر کی حمایت میں آئے یونس خان۔


شعیب اختر کے ساتھ کھڑے ہوئے یونس خان


سال 2009 میں پاکستان کو ٹی -20 عالمی کپ جتانے والے کپتان یونس خان نے پی سی بی کو کہا کہ وہ شعیب اختر کی باتوں کا تجزیہ کریں۔ یونس خان (Younus Khan) نے ٹوئٹ کیا، ’شعیب اختر (Shoaib Akhtar) نے بےحد ہی کڑوا سچ کہا ہے۔ یہ پی سی بی کے لئے ان کے باتوں کا ایمانداری سے تجزیہ کرنے کا وقت ہے، جس سے کھلاڑیوں اور پاکستان کرکٹ کی بہتری ہوسکے۔ میں شعیب اختر کے ساتھ کھڑا ہوں’۔ یونس خان کا یہ ٹوئٹ اس بعد تصدیق کرتا ہےکہ شعیب اختر کہیں نہ کہیں صحیح بول رہے ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ شعیب اختر کی حمایت کر رہے ہیں۔

شعیب اختر نے پی سی بی سے متعلق کہی تھی یہ بات
شعیب اختر (Shoaib Akhtar) نے اپنے ویڈیو میں پی سی بی کے قانونی شعبے پر تنقیدکرتے ہوئےاسے نالائق اور نیچ بتا دیا تھا۔ انہوں نےکہا، ’پی سی بی کا قانونی شعبہ گرا ہوا اور نالائق ہے۔خاص طور پر فضل رضوی ہیں، پتہ نہیں کہاں سے آجاتا ہے۔ وہ 15-10 سالوں سے پی سی بی کے ساتھ ہے اور وہ ہرکیس ہارا ہے۔ اس نے شاہد آفریدی اور یونس خان کو  بھی عدالت میں گھسیٹا تھا۔ ہمیشہ اسٹار کھلاڑیوں کی عزت ہونی چاہئے۔ دو ٹکےکے وکیلوں کو کوئی نہیں جانتا۔ فضل رضوی پی سی بی سے پیسے بناتا ہے، کیس کو الجھاتا ہے اور پھر ہار جاتا ہے’۔

شعیب اختر نےکہا تھا کہ پی سی بی سے بہت بڑی غلطی ہوئی ہے اور اس نے اسلام اور آئین کی توہین کی ہے۔
شعیب اختر نےکہا تھا کہ پی سی بی سے بہت بڑی غلطی ہوئی ہے اور اس نے اسلام اور آئین کی توہین کی ہے۔


ہر کھلاڑی کے لئے الگ ضابطے بناتا ہے پی سی بی

شعیب اختر (Shoaib Akhtar) نےالزام لگایا تھا کہ پی سی بی نے ہرکھلاڑی کےلئے الگ ضابطہ بنا رکھا ہے، کسی میچ فکسنگ کرنے والے کھلاڑی کو وہ دوبارہ ٹیم میں لےآتا ہے تو کسی کا کیریئر برباد کردیتا ہے۔ شعیب اختر نےکہا، ’1995 سے سلسلہ شروع ہوا اور اب تک یہ چلا جارہا ہے۔ پی سی بی نالائق ہے، اس کا قانونی شعبہ بھی نالائق ہے۔ ممد عامر کو واپس کیوں لائے۔ سلمان بٹ کےلئے الگ قانون ہے۔ محمد آصف کےلئے الگ قانون ہے۔ پی سی بی نے بھی میچ فکسنگ کے قصورواروں کو بچایا ہے۔ اب لوگ میچ فکسنگ کو معمولی بات سمجھتے ہیں۔ سوچتے ہیں کہ دو سال بعد پھر واپس آجاوں گا’۔ شعیب اختر نے مزیدکہا، ’پاکستان کی اسمبلی میں کرمنل ایکٹ پاس کرانا پڑےگا۔ میچ فکسنگ میں جیل کی سزا کی تجویز ہوگی، تبھی لوگ سدھریں گے’۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: May 01, 2020 03:28 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading