உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Nasa Artemis 1: دنیا کا سب سے طاقتور آرٹیمس 1راکٹ کیوں ہوا ناکام؟ جانیے تفصیلات

    Youtube Video

    Nasa Artemis 1: ایک بلاگ پوسٹ میں ناسا نے کہا کہ اس کے انجینئرز زیادہ سے زیادہ ڈیٹا اکٹھا کرنے کے لیے ابھی بھی مصروف ہیں۔ آرٹیمس 1 راکٹ اور خلائی جہاز اب بھی مستحکم اور محفوظ حالت میں ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • inter, IndiaUSAUSAUSAUSA
    • Share this:
      Nasa Artemis 1: نیشنل ایروناٹکس اینڈ اسپیس ایڈمنسٹریشن (NASA) نے اسپیس لانچ سسٹم (SLS) راکٹ پر آر ایس۔ 25 انجن کی خرابی کی وجہ سے اپنے آرٹیمس 1 کی لانچنگ روک دی ہے، جو چاند پر اب تک بنایا گیا سب سے طاقتور راکٹ ہے۔ متوقع الٹی گنتی سے دو گھنٹے پہلے ناسا کے انجینئرز کو پتہ چلا کہ ایک انجن سے توقع کے مطابق دھواں نہیں نکل رہا تھا۔ کیونکہ جب کوئی بھی راکٹ آگے بڑھتا ہے تو اس کے انجن سے دھواں نکلتا ہے، یہ اس بات کی علامت ہوتی ہے کہ اس راکٹ کا انجن کارگرد ہے۔

      ایک بلاگ پوسٹ میں ناسا نے کہا کہ اس کے انجینئرز زیادہ سے زیادہ ڈیٹا اکٹھا کرنے کے لیے ابھی بھی مصروف ہیں۔ آرٹیمس 1 راکٹ اور خلائی جہاز اب بھی مستحکم اور محفوظ حالت میں ہے۔ پیر کے روز ناسا کو انجنوں میں ہائیڈروجن لیک اور تھرمل پروٹیکشن سسٹم کے مواد میں ایک شگاف کے بارے میں پتہ چلا، جو راکٹ کے بنیادی حصے کی حفاظت کرتا ہے۔ جب کہ ناسا کا کہنا ہے کہ ان مسائل کو منصوبہ بند لانچ ونڈو سے پہلے ہی حل کر لیا گیا تھا۔

      انتہائی دھماکہ خیز ہائیڈروجن کا اخراج:

      اگلی لانچ ونڈو جمعہ 2 ستمبر کو ہے۔ ناسا نے اس دوران راکٹ کو بار بار روکا اور تقریباً 1 ملین گیلن سپر کولڈ ہائیڈروجن اور آکسیجن کے ساتھ اسپیس لانچ سسٹم کے تحت راکٹ میں ایندھن بھرنا شروع کیا کیونکہ اسی جگہ پر انتہائی دھماکہ خیز ہائیڈروجن کے اخراج کی وجہ سے موسم بہار میں ڈریس ریہرسل کے دوران رساو دیکھا گیا تھا۔ جو کہ ناکامی کا ایک واضح سبب ہے۔

      اس سے قبل ناسا نے کہا تھا کہ آرٹیمیس 1 چاند پر بھیجے جانے والے تین راکٹوں میں سے سب سے پہلا راکٹ ہے۔ 2025 تک تینوں مشن چاند پر بھیجے جائیں گے اور اس کے بعد خلاباز 50 سال میں پہلی بار چاند پر قدم رکھیں گے۔ آرٹیمس 1 کے بارے میں امریکہ میں قائم خلائی ایجنسی نے انکشاف کیا ہے کہ یہ راکٹ اورین پر مشتمل ہے، جو 98 میٹر (322 فٹ)، 2,600 ٹن (2,875 ٹن) خلائی لانچ سسٹم (SLS) میگا کے اوپر چھ افراد پر مشتمل گہری خلائی ریسرچ کیپسول ہے۔

      حکام نے بتایا کہ پھر ناسا اس وقت نئی مصیبت میں پھنس گیا جب وہ راکٹ کے چار اہم انجنوں میں سے ایک کو صحیح طریقے سے ٹھنڈا کرنے میں ناکام رہا۔ خبر رساں ادارہ اے پی کے مطابق لانچ ملتوی ہونے کے اعلان کے بعد انجینئرز ڈیٹا اکٹھا کرنے اور مسئلے کے ماخذ کی نشاندہی کرنے کے لیے کام کررہے ہیں۔


      آرٹیمیس 1 لانچ کب ہوگا؟

      یہ بھی پڑھیں:

      Afghanistan میں اچانک آئے سیلاب سے تباہی، 180 لوگوں کی موت، سیکڑوں زخمی اور لاپتہ

      مذکورہ مشن کا لائیو ناسا کے یوٹیوب چینل پر نشر کیا جا سکتا ہے۔ ایسوسی ایٹڈ پریس سے بات کرتے ہوئے ناسا کے ایڈمنسٹریٹر بل نیلسن نے کہا کہ ہم اس پر زور دیں گے اور اس کی جانچ کریں گے۔ پورے مشن کو کامیابی سے انجام تک پہنچانے کے لیے ہم مسلسل کوشاں ہیں، تاکہ اسے زیادہ سے زیادہ محفوظ بنانے کی کوشش کی جا سکے اور وہ کامیابی ساتھ پائے تکمیل تک پہنچے۔

      یہ بھی پڑھیں:

      پاکستان میں 500روپئے کلو ٹماٹر اور 400 روپے میں پیاز، اب مہنگائی سے بچنے کیلئے ہندستان کے آگے پھیلائے گا ہاتھ



      خلائی سائنسدانوں کے مطابق آرٹیمیس 1 خلاء میں کسی بھی انسانی خلائی جہاز کے مقابلے میں زیادہ دیر تک قائم رہ سکتا ہے، یہ چاند سے بہت دور تک 40,000 میل کا سفر طے کرے گا۔ اپنے 45 روزہ مشن کی تکمیل کے بعد آرٹیمس 1 کے اکتوبر میں بحر الکاہل میں گرنے کی توقع ہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: