உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Jagdeep Dhankhar: نائب صدر کا انتخاب کیسے ہوتا ہے؟ کیا ہوتی ذمہ داریاں؟ جانیے تفصیلات

    آئین کے تحت نائب صدر پارلیمنٹ کے کسی ایوان یا کسی بھی ریاست کی مقننہ کے ایوان کا رکن نہیں ہوگا۔

    آئین کے تحت نائب صدر پارلیمنٹ کے کسی ایوان یا کسی بھی ریاست کی مقننہ کے ایوان کا رکن نہیں ہوگا۔

    لوک سبھا اور راجیہ سبھا کے ممبران بشمول نامزد ممبران نائب صدر کے انتخاب میں ووٹ دینے کے اہل ہیں۔ موجودہ نائب صدر ایم وینکیا نائیڈو (M Venkaiah Naidu) کی میعاد 10 اگست کو ختم ہو رہی ہے۔ نائب صدر راجیہ سبھا کے چیرپرسن بھی ہیں۔

    • Share this:
      دونوں ایوانوں کے اراکین پارلیمنٹ آج یعنی ہفتہ کے روز ہندوستان کے اگلے نائب صدر (Vice-President of India) کے انتخاب کے لیے ووٹ ڈالیں گے جہاں این ڈی اے کے امیدوار جگدیپ دھنکھر (Jagdeep Dhankhar) کا مقابلہ اپوزیشن کی مارگریٹ الوا (Margaret Alva) سے ہے۔ تجزیہ نگاروں کے مطابق این ڈی اے کے حق میں زیادہ تعداد کی بنیاد پر مغربی بنگال کے سابق گورنر دھنکھر جیت کے لیے تیار ہیں۔ جب کہ اپوزیشن اتحاد میں دراڑیں دکھائی دے رہی تھیں کیونکہ ممتا بنرجی (Mamata Banerjee) کی ترنمول کانگریس نے الوا کے نام پر فیصلہ کرتے ہوئے مشاورت کی کمی کا الزام لگایا اور ووٹنگ سے باز رہنے کا فیصلہ کیا۔

      80 سالہ الوا کانگریس کے تجربہ کار ہیں اور راجستھان اور اتراکھنڈ کے گورنر رہ چکے ہیں، جب کہ 71 سالہ دھنکھر سوشلسٹ پس منظر کے ساتھ راجستھان سے تعلق رکھنے والے جاٹ لیڈر ہیں۔ تاہم الوا کو جمعہ کے روز علاقائی پارٹی تلنگانہ راشٹرا سمیتی (TRS) کی حمایت حاصل ہوئی، عام آدمی پارٹی اور جھارکھنڈ مکتی مورچہ (جے ایم ایم) کی جانب سے مخالف امیدوار کو حمایت کا اعلان کیا گیا۔ اے آئی ایم آئی ایم (AIMIM) نے بھی الوا کی حمایت کی ہے۔ جنتا دل (متحدہ)، وائی ایس آر سی پی، بی ایس پی، اے آئی اے ڈی ایم کے اور شیو سینا جیسی کچھ علاقائی جماعتوں کی حمایت سے این ڈی اے کے نامزد امیدوار کو 515 سے زیادہ ووٹ ملنے کا امکان ہے، جو ان کے لیے آرام سے جیتنے کے لیے کافی ہے۔

      لوک سبھا اور راجیہ سبھا کے ممبران بشمول نامزد ممبران نائب صدر کے انتخاب میں ووٹ دینے کے اہل ہیں۔ موجودہ نائب صدر ایم وینکیا نائیڈو (M Venkaiah Naidu) کی میعاد 10 اگست کو ختم ہو رہی ہے۔ نائب صدر راجیہ سبھا کے چیرپرسن بھی ہیں۔

      انتخابی عمل پر ایک نظر ڈالیں:

      نائب صدر کا دفتر:

      آئین کے دفعہ 63 کے مطابق ہندوستان کا ایک نائب صدر ہوگا۔ دفعہ 64 کے تحت نائب صدر ریاستوں کی کونسل (راجیہ سبھا) کا بطور آفیشیو چیئرمین ہوگا۔

      دفعہ 65 کہتا ہے کہ صدر کے عہدے میں اس کی موت، استعفیٰ یا برطرفی، یا دوسری صورت میں کسی بھی جگہ خالی ہونے کی صورت میں، نائب صدر اس تاریخ تک صدر کے طور پر کام کرے گا جس تاریخ کو نیا صدر اس کے دفتر میں داخل ہوتا ہے۔"

      نائب صدر کا انتخاب کیسے ہوتا ہے؟

      نائب صدر کا انتخاب پارلیمنٹ کے دونوں ایوانوں کے اراکین پر مشتمل الیکٹورل کالج کے اراکین کے ذریعے متناسب نمائندگی کے نظام کے مطابق واحد منتقلی ووٹ کے ذریعے کیا جائے گا اور ایسے انتخاب میں ووٹنگ خفیہ رائے شماری کے ذریعے ہوگی۔

      یہ بھی پڑھیں:

      آزادی کے 75 سال کے موقع پر خلا میں بھی لہرائے گا ترنگا، ISRO کی جانب سے ہوگی پیش رفت

      2022 کے انتخابات کے لیے الیکٹورل کالج راجیہ سبھا کے 233 منتخب اراکین، راجیہ سبھا کے 12 نامزد اراکین اور لوک سبھا کے 543 منتخب اراکین پر مشتمل ہے، جس میں 788 اراکین شامل ہیں۔

      یہ بھی پڑھیں:

      دنیا میں کتنے ہیں چار مینار؟، صرف یہاں دیکھیں دکنی زبان میں مختلف خبریں

      آئین کے تحت نائب صدر پارلیمنٹ کے کسی ایوان یا کسی بھی ریاست کی مقننہ کے ایوان کا رکن نہیں ہوگا۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: