میرے اقتدار میں رہتے ہوئے مغربی بنگال میں نافذ نہیں ہوگا این آرسی : وزیراعلیٰ ممتابنرجی

ممتابنرجی نےشمالی بنگال کے دورے کے موقع پر کہا،’این آر سی کا نفاذ ریاستی حکومت پر منحصر ہے۔ ریاست میں اسے نافذ کرنے کا کوئی سوال ہی نہیں اٹھتا‘۔

Oct 23, 2019 12:04 AM IST | Updated on: Oct 23, 2019 12:04 AM IST
میرے اقتدار میں رہتے ہوئے مغربی بنگال میں نافذ نہیں ہوگا این آرسی : وزیراعلیٰ ممتابنرجی

مغربی بنگال کی وزیراعلیٰ ممتا بنرجی: فائل فوٹو

مغربی بنگال کی وزیراعلیٰ ممتابنرجی نے منگل کے روز کو دوہرایاکہ ریاست میں نیشنل رجسٹرآف سٹیزن (این آر سی) نافذ نہیں ہوگا۔ممتابنرجی نےشمالی بنگال کے دورے کے موقع پر کہا،’این آر سی کا نفاذ ریاستی حکومت پر منحصر ہے۔ ریاست میں اسے نافذ کرنے کا کوئی سوال ہی نہیں اٹھتا‘۔انہوں نے کہا،’ووٹرلسٹ کی توثیق احتیاط سے کی جانی چاہیے۔ اگر کچھ ضروری کاغذات کھو جاتے ہیں تو پولیس میں شکایت درج کروائی جانی چاہیے۔

وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نے شہریوں سے’ووٹر لسٹ میں ایک ہی جگہ نام رکھنے کی اپیل کرتے ہوئے کہا ہے کہ جب تک وہ ریاست میں اقتدارمیں ہیں نہ این آرسی نافذ ہوگا اور نہ ڈیٹینشن کیمپ لگائے جائیں گے۔وزیراعلیٰ شمالی بنگال کے دورے پرہیں اورآج کوچ بہار، علی پور دوار، اور جلپائی گوڑی ضلع انتظامیہ کے ساتھ سلی گوڑی کے ریاستی سیکریٹریٹ اتر کنیا میٹنگ کی۔آسام میں این آر سی کی حتمی فہرست شایع ہونے کے بعد وزیراعلیٰ ممتا بنرجی پہلی مرتبہ آسام سے متصل اضلاع کے دورے پر ہیں۔لوک سبھا انتخابات میں شمالی بنگال میں ممتا بنرجی کو کراری شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا۔ممتا بنرجی نے افسران سے کہا کہ بہت ساری مرتبہ ایک ایک ووٹر کے نام کئی جگہوں پر درج ہوجاتے ہیں اس لیے اس کی شناخت کریں۔

Loading...

وزیرا علیٰ ممتا بنرجی

ممتا بنرجی نے کہا کہ بنگال میں این آر سی سے متعلق غلط پروپیگنڈہ کیا جاتا ہے۔یہ غلط پروپیگنڈہ ہے۔بنگال میں اس وقت این آر سی نافذ ہونے نہیں جارہا ہے۔اس لیے اس پر خوف زدہ ہونے کی ضرورت نہیں ہے۔میں آپ کی محافظ ہوں۔ممتا بنرجی نے کہا کہ کوچ بہار،علی پور دواراور جلپائی گوڑی میں این آر سی کے نام پر خوف پھیلاے کی کوشش ہورہی ہے اسے کسی بھی صورت میں برداشت نہیں کیا جائے گا۔ممتا بنرجی نے کہا کہ وہ شہری ترمیمی بل کی بھی حمایت نہیں کریں گی۔اس بل کے ذریعہ پہلے لاکھوں افراد کو غیرملکی قرار دیا جائے گا اور پھر اس کے بعد حکومت کے رحم وکرم پر لوگ ہوجائیں گے۔مذہب کے نام پر تفریق برداشت نہیں کی جائے گی۔

ممتا بنرجی نے کہا کہ یہ لوگ پروپیگنڈہ کرتے ہیں کہ صرف ممتا بنرجی خلاف ہیں جب کہ ایسا نہیں ہے۔انسانیت کی بنیاد پر اس پورے مسئلے پر غورکریں۔

وزیراعلیٰ ممتابنرجی نے کہا کہ بی ڈی او، بی ایل آر او، ایس ڈی او، ڈی ایم جیسے اعلیٰ افسران کو چاہیے کہ وہ مناسب ہدایات کے توسط سے عوام کی مدد کریں‘۔ممتابنرجی نے سلیگُڑی پولیس لائن میں بیجوئے سمِّیلانی اتسو میں شریک ہونے کے ایک دن بعد اترکنیا میں انتظامی جائزہ اجلاس کیا جس میں جلپائی گُڑی، علی پور، دواراور کوچ بہار کے افسران نے حصہ لیا۔انہوں نےافسران کو ریاست کے مختلف منصوبوں کے بارے میں عوام کو بیدار کرنے کی بات یاد دلائی۔

مغربی بنگال کی وزیراعلیٰ ممتا بنرجی: فائل فوٹو مغربی بنگال کی وزیراعلیٰ ممتا بنرجی: فائل فوٹو

Loading...