ساڑھے تین ماہ بعد قبرستان سے نکالی گئی خاتون کی لاش ، جانیں کیا ہے اصل معاملہ

اترپردیش کے میرٹھ میں ایک خاتون کی چھت سے گر کر ہوئی موت کا معاملہ الجھتا ہی جارہا ہے ۔ مرنے والی خاتون کے اہل خانہ نے اس معاملہ میں پڑوسیوں کے خلاف قتل کی شکایت درج کروائی ہے ۔

Sep 24, 2019 07:55 PM IST | Updated on: Sep 24, 2019 07:55 PM IST
ساڑھے تین ماہ بعد قبرستان سے نکالی گئی خاتون کی لاش ، جانیں کیا ہے اصل معاملہ

ساڑھے تین ماہ بعد قبرستان سے نکالی گئی خاتون کی لاش ، جانیں کیا ہے اصل معاملہ

اترپردیش کے میرٹھ میں ایک خاتون کی چھت سے گر کر ہوئی موت کا معاملہ الجھتا ہی جارہا ہے ۔ مرنے والی خاتون کے اہل خانہ نے اس معاملہ میں پڑوسیوں کے خلاف قتل کی شکایت درج کروائی ہے ۔ وہیں پولیس پر الزام ہے کہ اس نے مرنے والی خاتون کے اہل خانہ پر دباو ڈال کر پوسٹ مارٹم کے بغیر ہی لاش کی تدفین کروادی ۔ خاتون کے اہل خانہ نے ایس ایس پی سے مل کر قتل کی شکایت درج کرانے کا مطالبہ کیا ہے ۔

اطلاعات کے مطابق پیپلی کھیڑا گاوں کی رہنے والی جمیلہ گزشتہ پانچ جون کی رات اپنے گھر کی چھت پر تھی ۔ اسی دوران اس کا پڑوسیوں عرفان ، اشفاق اور دیگر کے ساتھ کسی بات کو لے کر تنازع ہوگیا ۔ بتایا جارہا ہے کہ اس تنازع کے درمیان جمیلہ اچانک چھت سے گڑ پڑی ۔ اس حادثہ میں وہ بری طرح زخمی ہوگئی ۔ جمیلہ کو میرٹھ کے اسپتال میں بھرتی کرایا گیا ، جہاں 14 جون کو اس کی موت ہوگئی ۔

Loading...

امراجالا کی ایک خبر کے مطابق پولیس نے مرنے والی خاتون کے کنبہ پر دباو ڈالا اور پوسٹ مارٹم نہیں ہونے دیا ۔ بعد میں متاثرہ کنبہ نے ایس ایس پی سے رپورٹ درج کرانے کی فریاد کی تو تقریبا ایک ماہ بعد رپورٹ درج ہوئی ، لیکن معاملہ میں آگے کی کوئی جانچ نہیں ہوئی ۔

متاثرہ کنبہ کے مطابق حال ہی میں جب انہوں نے اس کی شکایت وزیر اعلی پورٹل پر کی تو پولیس حرکت میں آئی ۔ پیر کو مجسٹریٹ کے سامنے پیپلی کھیڑا کے قبرستان سے جمیلہ کی لاش کو نکال کر اس کو پوسٹ مارٹم کیلئے بھیجا گیا ۔ اس کی رپورٹ آنے کے بعد طے ہوگا کہ یہ قتل تھا یہ ایک حادثاتی موت تھی۔

Loading...