ہائی کورٹ نے گجرات فسادات کے ایک معاملے میں سات مزید ملزمین کو عمرقید کی سزا سنائی

نچلی عدالت نے اس معاملے کے تمام دس ملزمین میں سے دو کو قتل کا قصور وار قرا ردیتے ہوئے عمر قید کی سزا دی تھی جب کہ چار دیگر کو کم جرائم کا قصوروار قرا ردیا تھا اور چارکو بری کردیا تھا۔

Jul 25, 2016 04:54 PM IST | Updated on: Jul 25, 2016 04:54 PM IST
ہائی کورٹ نے گجرات فسادات کے ایک معاملے میں سات مزید ملزمین کو عمرقید کی سزا سنائی

احمدآباد۔  گجرات ہائی کورٹ نے گجرات فسادات سے متعلق ایک معاملے میں آج سات مزید ملزمین کو عمر قید کی سزا سنائی۔  27فروری2002 کو گودھرا میں سابرمتی ایکسپرس میں ایک ڈبے میں آگ لگنے کے سانحہ کے ایک دن بعد ریاست بھر میں پھیلے فسادات کے دوران احمد آباد ضلع کے ویرگمام میں بالنا ریلوے کراسنگ کے نزدیک ہجوم کے حملے میں اقلیتی فرقہ کے تین لوگوں کی موت ہوگئی تھی۔

نچلی عدالت نے اس معاملے کے تمام دس ملزمین میں سے دو کو قتل کا قصور وار قرا ردیتے ہوئے عمر قید کی سزا دی تھی جب کہ چار دیگر کو کم جرائم کا قصوروار قرا ردیا تھا اور چارکو بری کردیا تھا۔ جسٹس محترمہ ہرشا دیوانی اور جسٹس ویرین ویشنو کی بنچ نے گذشتہ 28جون کو اس معاملے کی سماعت کرتے ہوئے نچلی عدالت کی طرف سے قصور وار ٹھہرائے گئے دو ملزمین کی سزا کو برقرار رکھا تھا جب کہ بری قرار دئے گئے چار میں سے تین اور کم سنگین جرم کے چاروں ملزمین کو بھی قتل کا قصوروار ٹھہرایا تھا ۔ اسی عدالت نے آج سزا سناتے ہوئے ان ساتوں کو بھی عمر قید کی سزا سنائی ۔

Loading...

Loading...