ایس آئی ٹی اورجج پی بی دیسائی نے لیا نروڈا گاؤں میں موقع واردات کا جائزہ

احمد آباد۔ نروڈا گام قتل عام معاملے میں ایس آئی ٹی اورجج پی بی دیسائی نے نروڈا گاؤں میں موقع واردات کا آج شام جائزہ لیا ۔

Oct 05, 2017 09:06 PM IST | Updated on: Oct 05, 2017 09:06 PM IST
ایس آئی ٹی اورجج پی بی دیسائی نے لیا نروڈا گاؤں میں موقع واردات کا جائزہ

 احمد آباد۔ نروڈا گام قتل عام معاملے میں ایس آئی ٹی اورجج پی بی دیسائی نے  نروڈا گاؤں میں موقع واردات کا آج شام جائزہ لیا ۔ وہاں انہوں نے ان تمام مقامات کا باریکی سے معائنہ کیا  جہاں پر28 فروری 2002 میں فساد ہوا تھا۔ ان کے ساتھ دونوں پارٹیوں کے وکیل اورپراسیکیوٹر سریش شاہ موجود رہے۔ متاثرین کے وکیل شمشاد پٹھان نے اس پورے جائزہ کے تعلق سے بتایا کہ آج جج پی بی دیسائی نے نروڈا گام کا دورہ کیا، جہاں 2002 میں گیارہ مسلم برادری کے لوگوں کا قتل کردیا گیا تھا۔  آج جج پی بی دیسائی نے نروڈا بھاگوڑ علاقے کے پنچایت آفس کے آس پاس کا علاقہ، کنیا شالہ، مسلم محلہ ، حسینی چوک، ننو میاں کا مکان، بسم اللہ خان اور اشرف خان کے مکان، مدینہ بانو، ستار بھائی کا مکان، نواب کا مکان، ٹھاکر واس، بینک آف اںڈیا کی گلی میں  خود جاکر پورا معائنہ کیا اورعلاقے کی جغرافیائی حالت کو دیکھا۔ اس معاملے پر اگلی سنوائی  سات اکتوبر کو ہوگی۔

واضح رہے کہ اس معاملہ پراحمدآباد کی خصوصی عدالت میں گذشتہ دنوں جو سماعت ہوئی تھی اس کے مطابق  طے ہوا تھا کہ پانچ اکتوبر شام چار بجے ایس آئی ٹی کی ٹیم اور جج پی بی دیسائی موقع واردات (نروڈہ پاٹیہ گاؤں) کا جائزہ لینے جائیں گے ۔  گذشتہ ماہ ایس آئی ٹی نے نروڈا گاوں قتل عام معاملے کی سماعت کر رہے جج سے نروڈا گاوں کے جغرافیائی حالات جاننے کے لئے موقع واردات کا دورہ کرنے کی گذارش کی تھی۔ خصوصی عدالت نے اس معاملے پر گذشتہ ماہ امت شاہ کے ساتھ تمام 187 گواہوں کا بیان ریکارڈ کر لیا ہے۔

 اس معاملے میں 18 ستمبرکو بی جے پی کے قومی صدرامت شاہ کا بیان خصوصی عدالت  میں ریکارڈ کیا گیا ۔ امت شاہ اس کیس میں  سابق وزیر مایا کوڈنانی کے گواہ کے طور پر پیش ہوئےتھے ۔ شاہ نےعدالت کو بتایا تھا کہ جس دن نروڈہ گام میں فساد ہوا تھا  اس دن مایا کوڈنانی اسمبلی میں تھیں ۔

Loading...

Loading...