ہوم » ویڈیو » شمالی ہندوستان

نکاح حلالہ معاملہ: پرسنل لا بورڈ نے فریق بننے کے لئے عرضی دائر کی

آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ(اے آئی ایم پی ایل بی) نے سپریم کورٹ میں پیر کو عرضی داخل کر کے مسلمانوں میں جاری نکاح حلالہ اور بہو کی شادی کو چیلنج دینے والی عرضیوں میں فریق بنائے جانے کی اپیل کی ہے۔ اے آئی ایم پی ایل بی نے اپنی عرضی میں کہا ہے کہ عدالت کو اس میں دخل نہیں دینا چاہئے، یہ کام مقننہ کا ہے۔ بورڈ نے عدالت سے بی جے پی کے لیڈر اشونی اپادھیائے کی مفاد عامہ کی عرضی میں فریق بنانے کی اپیل کی ہے۔ اپادھیائے نے ایک مفاد عامہ کی عرضی دائر کر کے مسلمانوں میں جاری نکاح حلالہ اور بہو کی شادی سے متعلق رسوم کو غیر آئینی قرار دینے کا مطالبہ کیا ہے۔

شمالی ہندوستان| News18 Urdu | Jan 27, 2020 02:09 PM IST

آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ(اے آئی ایم پی ایل بی) نے سپریم کورٹ میں پیر کو عرضی داخل کر کے مسلمانوں میں جاری نکاح حلالہ اور بہو کی شادی کو چیلنج دینے والی عرضیوں میں فریق بنائے جانے کی اپیل کی ہے۔ اے آئی ایم پی ایل بی نے اپنی عرضی میں کہا ہے کہ عدالت کو اس میں دخل نہیں دینا چاہئے، یہ کام مقننہ کا ہے۔ بورڈ نے عدالت سے بی جے پی کے لیڈر اشونی اپادھیائے کی مفاد عامہ کی عرضی میں فریق بنانے کی اپیل کی ہے۔ اپادھیائے نے ایک مفاد عامہ کی عرضی دائر کر کے مسلمانوں میں جاری نکاح حلالہ اور بہو کی شادی سے متعلق رسوم کو غیر آئینی قرار دینے کا مطالبہ کیا ہے۔

براہ راست ٹی وی تازہ ترین
corona virus btn
corona virus btn
Loading