ہوم » ویڈیو » شمالی ہندوستان

جامعہ ملیہ اسلامیہ کے طلبا JNU تنازعہ پر کریں گے احتجاجِ، جانئے، دہلی پولیس افسران سمیت خاتون پولیس بھی تعینات

دہلی کی جواہر لال یونیورسٹی ایک بار پھر موضوع بحث بنی ہوئی ہے۔ اتوار کو لیفٹ ونگ اسٹوڈنٹ آرگنائزیشن اور اکھل بھارتیہ ودیارتھی پریشد کے درمیان مبینہ طور پرنان ویج کھانے کو لے کر جھڑپ ہوگئی ۔ جس میں تقریباً پندرہ طلباء زخمی ہوگئے جنھیں اسپتال میں داخل کریا گیا ہے۔بائیں بازو کے طلبہ نے الزام لگایا ہیکہ اے بی وی پی کے طلبہ نے نان ویج کھانے پر کاویری ہاسٹل کے میس سکریٹری کے ساتھ ہاتھا پائی کی ہے۔دوسری طرف، اے بی وی پی کے طلباء کا الزام ہے کہ بائیں بازو کے طلباء کاویری ہاسٹل میں طلباء کو رام نومی کی پوجا کرنے سے روک رہے تھے۔اس معاملے میں اے بی وی پی کے خلاف ایف آئی آر درج کرلی گئی ہے۔تو دوسری جانب اے بی وی پی نے لیفٹ کے خلاف ایف آئی آر درج کرائی ہے۔ دراصل، جے این یو کے کاویری ہاسٹل میں رہنے والے طلباء نے رام نومی کے دن کیمپس میں ہون پوجن کا اہتمام کیاتھا۔ اب لیفٹ ونگ اور اے بی وی پی آمنے سامنے ہیں۔ بتادیں کہ دونوں گروپوں کے درمیان جھڑپوں کی کچھ ویڈیوز سوشل میڈیا پر وائرل ہو رہی ہیں۔کیمپس کے باہر پولیس اہلکاروں کو تعینات کیا گیا ہے۔وہیں ،آج آئسا دہلی پولیس ہیڈکوارٹر کے باہر تشدد کے خلاف احتجاج کرے گی۔ وہیں اے بی وی پی اس معاملے پر پریس کانفرنس کرے گی

شمالی ہندوستان| News18 Urdu | Apr 12, 2022 03:23 PM IST

دہلی کی جواہر لال یونیورسٹی ایک بار پھر موضوع بحث بنی ہوئی ہے۔ اتوار کو لیفٹ ونگ اسٹوڈنٹ آرگنائزیشن اور اکھل بھارتیہ ودیارتھی پریشد کے درمیان مبینہ طور پرنان ویج کھانے کو لے کر جھڑپ ہوگئی ۔ جس میں تقریباً پندرہ طلباء زخمی ہوگئے جنھیں اسپتال میں داخل کریا گیا ہے۔بائیں بازو کے طلبہ نے الزام لگایا ہیکہ اے بی وی پی کے طلبہ نے نان ویج کھانے پر کاویری ہاسٹل کے میس سکریٹری کے ساتھ ہاتھا پائی کی ہے۔دوسری طرف، اے بی وی پی کے طلباء کا الزام ہے کہ بائیں بازو کے طلباء کاویری ہاسٹل میں طلباء کو رام نومی کی پوجا کرنے سے روک رہے تھے۔اس معاملے میں اے بی وی پی کے خلاف ایف آئی آر درج کرلی گئی ہے۔تو دوسری جانب اے بی وی پی نے لیفٹ کے خلاف ایف آئی آر درج کرائی ہے۔ دراصل، جے این یو کے کاویری ہاسٹل میں رہنے والے طلباء نے رام نومی کے دن کیمپس میں ہون پوجن کا اہتمام کیاتھا۔ اب لیفٹ ونگ اور اے بی وی پی آمنے سامنے ہیں۔ بتادیں کہ دونوں گروپوں کے درمیان جھڑپوں کی کچھ ویڈیوز سوشل میڈیا پر وائرل ہو رہی ہیں۔کیمپس کے باہر پولیس اہلکاروں کو تعینات کیا گیا ہے۔وہیں ،آج آئسا دہلی پولیس ہیڈکوارٹر کے باہر تشدد کے خلاف احتجاج کرے گی۔ وہیں اے بی وی پی اس معاملے پر پریس کانفرنس کرے گی

براہ راست ٹی وی تازہ ترین