ہوم » ویڈیو » وطن نامہ

لال جی ٹنڈن کےانتقال پرسیاسی لیڈران کا اظہار رنج، سیاست کیلئے ایک ناقابل تلافی نقصان سےکیاتعبیر

مدھیہ پردیش کے گورنر لال جی ٹنڈن نہیں رہے۔ لکھنؤ کے میدانتا اسپتال انھوں نے آخری سانس لی۔۔وہ پچاسی برس کے تھے۔پچھلے کچھ دنوں سے وہ بیمار تھے۔ان جگر اورمثانے میں انفیکشن تھا۔۔ لال جی ٹنڈن کے بیٹے آشتوش ٹنڈن نے ٹویٹ کرکے یہ جانکاری دی۔ان کے جسد خاکی کو آخری دیدارکے لیے ترلوک روڈ پر رکھا گیا ہے۔ آخری رسومات شام ساڑھے چار بجے ادا کی جائے گی ۔ مدھیہ پردیش کے گورنر لال جی ٹنڈن نہیں رہے۔ لکھنؤ کے میدانتا اسپتال میں اُن کا انتقال ہوگیا۔وہ پچاسی برس کے تھے۔ لال جی ٹنڈن کے بیٹے آشتوش ٹنڈن نے ٹویٹ کرکے یہ جانکاری دی۔ لال جی ٹنڈن گزشتہ کئی دنوں سے بیمار تھے اور میدانتا اسپتال میں زیرعلاج تھے۔ مدھیہ پردیش کے گورنرلال جی ٹنڈن کے سانحہ ارتحال کو مدھیہ پردیش کے لیڈروں نے سیاست کے لئے ایک ناقابل تلافی نقصان سے تعبیر کیا ہے۔۔انھوں نے کہا کہ سیاسی اور سماجی خدمات کے لئے لال جی ٹنڈن کو ہمیشہ یاد کیا جائے گا ۔

وطن نامہ| News18 Urdu | Jul 21, 2020 01:00 PM IST

مدھیہ پردیش کے گورنر لال جی ٹنڈن نہیں رہے۔ لکھنؤ کے میدانتا اسپتال انھوں نے آخری سانس لی۔۔وہ پچاسی برس کے تھے۔پچھلے کچھ دنوں سے وہ بیمار تھے۔ان جگر اورمثانے میں انفیکشن تھا۔۔ لال جی ٹنڈن کے بیٹے آشتوش ٹنڈن نے ٹویٹ کرکے یہ جانکاری دی۔ان کے جسد خاکی کو آخری دیدارکے لیے ترلوک روڈ پر رکھا گیا ہے۔ آخری رسومات شام ساڑھے چار بجے ادا کی جائے گی ۔ مدھیہ پردیش کے گورنر لال جی ٹنڈن نہیں رہے۔ لکھنؤ کے میدانتا اسپتال میں اُن کا انتقال ہوگیا۔وہ پچاسی برس کے تھے۔ لال جی ٹنڈن کے بیٹے آشتوش ٹنڈن نے ٹویٹ کرکے یہ جانکاری دی۔ لال جی ٹنڈن گزشتہ کئی دنوں سے بیمار تھے اور میدانتا اسپتال میں زیرعلاج تھے۔ مدھیہ پردیش کے گورنرلال جی ٹنڈن کے سانحہ ارتحال کو مدھیہ پردیش کے لیڈروں نے سیاست کے لئے ایک ناقابل تلافی نقصان سے تعبیر کیا ہے۔۔انھوں نے کہا کہ سیاسی اور سماجی خدمات کے لئے لال جی ٹنڈن کو ہمیشہ یاد کیا جائے گا ۔

براہ راست ٹی وی تازہ ترین
corona virus btn
corona virus btn
Loading